Home » Ajab tor ki hai ab ke sargrani mri | عجیب طور کی ہے اب کے سرگرانی مری

Ajab tor ki hai ab ke sargrani mri | عجیب طور کی ہے اب کے سرگرانی مری

Ajab tor ki hai ab ke sargrani mri by Abbas Tabish Poetries | عجیب طور کی ہے اب کے سرگرانی مری

 

عجیب طور کی ہے اب کے سرگرانی مری
میں تجھ کو یاد بھی کر لوں تو مہربانی مری

میں اپنے آپ میں گہرا اتر گیا شاید
مرے سفر سے الگ ہو گئی روانی مری

بس ایک موڑ مری زندگی میں آیا تھا
پھر اس کے بعد الجھتی گئی کہانی مری

تباہ ہو کے بھی رہتا ہے دل کو دھڑکا سا
کہ رائیگاں نہ چلی جائے رائیگانی مری

میں اپنے بعد بہت یاد آیا کرتا ہوں
تم اپنے پاس نہ رکھنا کوئی نشانی مری

 

 

اس کے بارے میں بھی پڑھیں: دشت میں پیاس بجھاتے ہوئے مر جاتے ہیں

 

شکریہ پڑھنے کا اور آپ کے قیمتی ٹائم کا

Ajab tor ki hai ab ke sargrani mri

عجیب طور کی ہے اب کے سرگرانی مری

ہمارے فیس بک پیج کو لائک اور فولو کریں

Facebook | TwitterPinterest

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *